Ghalib Poetry

Ghalib Poetry – Ghalib Urdu Poetry

Ghalib Poetry

Mirza Ghalib is one of the famous poet of Urdu language. He is known to be as the father of all the poets. Many poets copied him in many things. He wrote on almost all the topics, Tasawuf, love, ishq, and many more.

Ghalib wrote many beautiful thoughts in very simple and easy manner, even teachers are unable to to do its paraphrasing. They get confused when they see so much easy words, but his couplets always have had a proper and great meaning.

Mirza Ghalib has a variety of topics, some of them Ash’aars we are providing you here:

Ghalib Poetry 

Adhi Rat Hai Ab Wahan Koi Nahee Ho Ga

Ao Ghalib Us Ki Deewar Choom Aty Hain….

آدھی رات ہے اب وہاں کوئی نہیں ہوگا

آؤ غالب اْن کی دیوار چوم آتے ہیں۔۔۔۔۔۔۔۔

Ghalib Poetry

Ghalib Poetry


Ham Ko Maloom Hai Jannat Ki Haqeeqat Lekin

Dil K Khush Rakhny Ko Ghalib Yeh Khayal Acha Hai

ہم کو معلوم ہے جنت کی حقیقت لیکن

دل کے خوش رکھنے کو غالب یہ خیال اچھا ہے

Ghalib Poetry

Ghalib Poetry


Reekhty K Tum He Ustad Nahee Ho Ghalib

Kehty Hain Agly Zamany Main Koi Meer Bhii Tha

ریختے کے تمھی اْستاد نہیں ہو غالب

کہتے ہیں اگلے زمانے میں کوئی میر بھی تھا

Ghalib Poetry

Ghalib Poetry


Ham Ney Mana K Taghaful Na Kro Gy Lekin

Khak Ho Jaen Gain Tum Ko Khabar Hony Tak

ہم نے مانا کہ تغافل نہ کرو گے لیکن

خاک ہو جائیں گے تم کو خبر ہونے تک

Ghalib Poetry

Ghalib Poetry


Par Tu e Khoor Sy Hai Shabnum Ko Fana Ki Taleem

Main Bhi hun Ik Anayat Ki Nazar Hony Tak…………..

پر تْوِ خور سے ہے شبنم کو فنا کی تعلیم

میں بھی ہوں اِک عنایت کی نطر ہونے تک

Ghalib Poetry

Ghalib Poetry


Gham e Hasti Ka Asad Kis Sy Ho Juz Marg e Ilaj

Shamma Har Rang Main jalti Hai Sahar Hony Tak

غمِ ہستی کا اسد کس سے ہو جز مرگِ علاج

شمع ہر رنگ میں جلتی ہے سحر ہونے تک

Ghalib Poetry

Ghalib Poetry


Na tha Kch To Khuda Tha

Na Hota Kch To Khuda Hota

Daboya Mujh ko Hony Ney

Na Hota Main To Kia Hota

نہ تھا کچھ تو خدا تھا

نہ ہوتا کچھ تو خدا ہوتا

ڈبویا مجھ کو ہونے نے

نہ ہوتا میں تو کیا ہوتا

Ghalib Poetry

Ghalib Poetry


Ishq Mujh Ko Nahee Wehshat He Sahee

Meri Wehshat Teri Shohrat He Sahee…..

عشق مجھ کو نہیں وحشت ہی سہی

میری وحشت تیری شہرت ہی سہی

Ghalib Poetry

Ghalib Poetry


Dil e Nadaan tujhe Hwa Kia Ha

Akhir Is Dard Ki Dawa Kia Ha

Ham Hain Mushtaq Or Wo Bezar

Ya ILAHI Yeh Majra Kia Ha

دلِ ناداں تجھے ہوا کیا ہے

آخر اس درد کی دوا کیا ہے

ہم ہیں مشتاق اور وہ بیزار

یا الٰہی یہ ماجرا کیا ہے؟

Ghalib Poetry

Ghalib Poetry


Aah Ko Chahiyee Ik Umer Asar Hony Tak

Kon Jeeta Hai Teri Zulf K Sar Hony Tak

آہ کو چاہیے اک عمر اثر ہونے تک

کون جیتا ہے تیری زلف کے سر ہونے تک

Ghalib Poetry

Ghalib Poetry


Na Suno Gar Bura Kahy Koi

Na Kaho Gar Bura Kry Koi

Jab Tawaqu He Uth Gaee Ghalib

Q Kisi Ka Gila Kry Koi

نہ سنو گر برا کہے کوئی

نہ کہو گر برا کرے کوئی

جب توقع ہی اُٹھ گئی غالبؔ

کیوں کسی کا گلہ کرے کوئی

Ghalib Poetry

Ghalib Poetry


Dard Ho Dil Main To Dawa Kijiye

Dil He Jbh Dard Ho To Kia Kijiye

درد ہو دل میں تو دوا کیجیے

دل ہی جب درد ہو تو کیا کیجیے

Ghalib Poetry

Ghalib Poetry


Koi Umeed Bar Nahee Ati

Koi Soorat Nazar Nahee Ati

Moat Ka Aik Din Moiuun Hai

Neend Q Rat Bhar Nahee Ati

Agy Ati The Hal e Dil Py Hansi

Ab Kisi Bat Par Nahee Ati

کوئی اُمید بر نہیں آتی

کوئی صورت نظر نہیں آتی

موت کا ایک دن معین ہے

نیند کیوں رات بھر نہیں آتی

آگے آتی تھی حالِ دل پر ہنسی

اب کسی بات پر نہیں آتی

Ghalib Poetry

Ghalib Poetry


Yeh Na Thi Hmari Qismat k Wisal e Yar Hota

Agar Or Jeety Rehty Yehee Intezar Hota………

یہ نہ تھی ہماری قسمت کہ وصالِ یار ہوتا

اگر اور جیتے رہتے، یہی انتظار ہوتا

Ghalib Poetry

Ghalib Poetry


Tery Wady Par Jiye Ham To Yeh Jaan Jhoot Jana

K Khushi Sy Mar Na Jaty Agar Aitabar Hota…….

تیرے وعدے پر جیے ہم تو یہ جان جھوٹ جانا

کہ خوشی سے مر نہ جاتے گر اعتبار ہوتا

Ghalib Poetry

Ghalib Poetry


Koi Mery Dil Sy Poochy, Tery Teer e Neem Kash Ko

Yeh Khalish Sy Kahan Hoti Jo Jigar K Paar Hota…..

کوئی میرے دل سے پوچھے، ترے تیرِ نیم کش کو

یہ خلش کہاں سے ہوتی، جو جگر کے پار ہوتا

Ghalib Poetry

Ghalib Poetry


Main Jo Kehta Hun K Ham Lain Gain Qayamat Main tumahain

Kis Raooonat Sy Woh Kehty Hain K Ham Hoor Nahee…………….

میں جو کہتا ہوں کہ ہم لیں گے قیامت میں تمھیں

کس رعونت سے  وہ کہتے ہیں کہ ہم حور نہیں

Ghalib Poetry

Ghalib Poetry


Dil He To Hai Na Sang o Khasht Dard Sy Bhar Na Aey Q

Roen Gain Ham Hazar Baar Koi Hamen Sataey Q

دل ہی تو ہے، سنگ و خشت سے بھر نہ آئے کیوں

روئیں گے ہم  ہزار بار، کوئی ہمیں ستائے کیوں۔۔۔۔۔۔

Ghalib Poetry

Ghalib Poetry


Akely Raat Bhar Tarapta Raha Mareez Sham e Gham Ghalib

Na Tum Aey, Na Neend ii, Na Chain Aya, Na Moat Aii

اکیلے رات بھر تڑپتا رہا مریضِ شامِ غم غالبؔ

نہ تم آئے، نہ نیند آئی، نہ چین آیا، نہ موت آئی

Ghalib Poetry

Ghalib Poetry


Kahan Mey Khany Ka Darwaza Ghalib Or Kahan Waizz

Par Itna Janty Hain Kal Wo jata Tha K Ham Nikly

کہاں مے خانے کا دروازہ غالبؔ اور کہاں واعظ

پر اتنا جانتے ہیں، کل وہ جاتا تھا کہ ہم نکلے

Ghalib Poetry

Ghalib Poetry


Dar Khoor e Qehr o Gazab Jab Koi Ham Sa Na Hwa

Phr Galat Kia Hai K koi Ham Sa Paida Na Hwa………

در خورِ قہر و غضب جب کوئی ہم سا نہ ہوا

پھر غلط کیا ہے کہ کوئی ہم سا پیدا نہ ہوا

Ghalib Poetry

Ghalib Poetry


Hun Tery Wada Na Krny Par Bhe Razi K Kbhe

Gosh Minnat Kash e Gulbang e Tasali Na Hwa

ہوں تیرے وعدہ نہ کرنے پر بھی راضی کہ کبھی

گوش منّت کشِ گلبنگِ تسّلی نہ ہوا

Ghalib Poetry

Ghalib Poetry


Khulta Kisi pay Q Mery Dil Ka Maa’mala

Shairoo’n K Intekhab Ney Ruswa Kia Mujhe

کھلتا کسی پہ کیوں میرے دل کا معاملہ

شعروں کے انتخاب نے رسوا کیا مجھے

Ghalib Poetry

Ghalib Poetry


Sadgi O Purkari, Bey Khudi O Khushyari

Husn Ko Tghaful Main Jurat Azma Paya

سادگی و پرکاری، بے خودی و ہوشیاری

حسن کو تغافل میں جراؑت آزما پایا

Ghalib Poetry

Ghalib Poetry


Jala Hai Jism Jahan, Dil B Jal Gya Ho Ga

Kuraidty Ho Jo Ab Rakh, Justujo Kia Hai

جلا ہے جسم جہاں، دل بھی جل گیا ہو گا

کریدتے ہو اب راکھ، جستجو کیا ہے؟؟؟؟

Ghalib Poetry

Ghalib Poetry


Yeh Kahan Ki Dosti hai K Baney Hain Dost Naseh

Koi Chara Saaz Hota, Koi Gham Gusaar Hota……

یہ کہاں کی دوستی ہے کہ بنے ہیں دوست ناصح

کوئی چارہ ساز ہوتا، کوئی ٖغم گسار ہوتا۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

Ghalib Poetry

Ghalib Poetry


Ya Rab Wo Na Smajhy hain, Na Smjhain Gain Meri Bat

Day Or Dil Unko, Jo Na Dy Mujh Ko Zabaa’n Orr……….

یا رب وہ نہ سمجھے ہیں، نہ سمجھیں گے میری بات

دے اور دل اُن کو، جو نہ دے مجھ کو زباں اور۔۔۔۔۔۔۔۔

Ghalib Poetry

Ghalib Poetry


Muhabbat Main Nahee Hai Farq Jeeny Or Marny Ka

Usi Ko Daikh Kr Jeety Hain, Jis Kafir Pay Dam Nikly

محبت میں نہیں ہے فرق جینے اور مرنے کا

اُسی کو دیکھ کر جیتے ہیں، جس کافر پہ دم نکلے

Ghalib Poetry

Ghalib Poetry


Yeh Faiz e Be Dilli, No Meedi e Jawed Asaa’n Hai

Kushaaish Ko Hmara Uqda e Mushkil Pasand Aya

یہ فیضِ بے دلی، نو میدی جاوید آساں ہے

کُشیش کو ہمارا عقدہ مشکل پسند آیا

Ghalib Poetry

Ghalib Poetry


Parye Gar Beemar To Koi Na Ho Beemar Daar

Or Agar Mar Jaiye To Noha Khawa’n Koi Na Ho

پڑیے گر بیمار تو کوئی نہ ہو بیمار دار

اور اگر مر جائیے تو نوحہ خواں کوئی نہ ہو

Ghalib Poetry

Ghalib Poetry


Be Khudi Be Sabab Nahee Hai Ghalib

Kch To Hai Jis Ki Parada Dari Hai

بے خودی بے سبب نہیں غالب

کچھ تو ہے جس کی پردہ داری ہے

Ghalib Poetry

Ghalib Poetry


Un K Daikhy Sey Jo Aa jati Hai Munh Par Ronaq

Wo Yeh Samjahty hain K Beemar Ka Haal Acha Ha

اُن کے دیکھنے سے جو آ جاتی ہے منہ پر رونق

وہ یہ سمجھتے ہیں کہ بیمار کا حال اچھا ہے۔۔۔۔۔۔

Ghalib Poetry

Ghalib Poetry


Raaz e Mashoooq Naa Ruswa Ho Jaey

Warna Mar Jany Main Kch Bhaid Nahee

رازِ معشوق نہ رسوا ہو جائے

ورنہ مر جانے میں کچھ بھید نہیں

Ghalib Poetry

Ghalib Poetry


Ghalib Bura Naa Maaan Wo Waiz Bura Kahy

Aica Bhi Koi Hai K Sb Acha Kahen Jisy………..

غالب برا نہ مان جو واعظ برا کہے

ایسا بھی کوئی ہے کہ سب اچھا کہیں جسے

Ghalib Poetry

Ghalib Poetry


Thikana Qabar Ha Tera, Ibadat Kch To Kar Ghalib

Kahawat Hai Khali Hath Kisi K Ghar Jaya Nahee Krty

ٹھکانہ قبر ہے تیرا، عبادت کچھ تو کر غالبؔ

کہاوت ہے خالی ہاتھ کسی کے گھر جایا نہیں کرتے

Ghalib Poetry

Ghalib Poetry


Ham Bhi Munh Main Zubaa’n Rakhty Hain

Kash Poocho K Muddua Kia Hai……………….

ہم بھی منہ میں زبان رکھتے ہیں

کاش پوچھو کہ مدعا کیا ہے۔۔۔۔۔۔۔

Ghalib Poetry

Ghalib Poetry


Aashqi Sabar Talab Or Tamanna Be Taab

Dil Ka Kia Rang Kru Khoon e Jigar Hony Tak

عاشقی صبر طلب اور تمنا بے تاب

دل کا کیا رنگ کروں خونِ جگر ہونے تک

Ghalib Poetry

Ghalib Poetry


Marty Hain Aarzoo Main Marny Ki

Moat Ati Hai Par Nahee Atii………….

مرتے ہیں آرزو میں مرنے کی

موت آتی ہے پر نہیں آتی۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

Ghalib Poetry

Ghalib Poetry


Kb Wo Sunta Hai Kahani Meri

Or Phr Wo Bhi Zubani Meri

کب سنتا ہے وہ کہانی میری

اور پھر وہ بھی زبانی میری۔۔

Ghalib Poetry

Ghalib Poetry


Dukh Dy Kar Swal Krty Ho

Ghalib tm bhi Kamal Krty Ho

دکھ دے کر سوال کرتے ہو

غالبؔ تم بھی کمال کرتے ہو

Ghalib Poetry

Ghalib Poetry


Tha Zindagi Main Marg Ka Khatka Laga Hwa

Urny Sey Peshtar Bhi Mra Rang Zard Tha……….

تھا زندگی میں مرگ کا کھٹکا لگا ہوا

اُڑنے سے پیشتر بھی میرا رنگ زرد تھا

Ghalib Poetry

Ghalib Poetry


Ishq Par Zor Nahee, Hai Yeh Wo Aatish Ghalib

K Lagaey Na Lagy Or Bujhaey Naa Bany………..

عشق پر زور نہیں، ہے یہ وہ آتش غالبؔ

کہ لگائے نہ لگے اور بجھائے نہ بنے۔۔۔

Ghalib Poetry

Ghalib Poetry


Bharam Khul Jaey Zalim Tery Qamat Ki darazi Ka

Agar Is Turrah e Paich o Khum Ka Paich o Khum Nikly

بھرم کھل جائے ظالم تیرے قامت کی درازی کو

اگر اِس طرہؑ پیچ و خم کا پیچ و خم نکلے۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

Ghalib Poetry

Ghalib Poetry


Hazaroo’n Khwahishain Aici K Har Khwahish Pay Dam Nikly

Bht Nikly Mery Armaa’n Magar Phr Bhi Kam Nikly………………

ہزاروں خواشیں ایسی کہ ہر خواہش پہ دم نکلے

بہت نکلے میرے ارماں مگر پھر بھی کم نکلے۔۔

Ghalib Poetry

Ghalib Poetry


Qismat Buri Sahee Par Tbiyt Buri Nahee

Hai Shukr Ki Jagah K Shikayat Nahee Mujhe

قسمت بری ہی سہی پر طبعیت بری نہیں

ہے شکر کی جگہ کہ شکایت نہیں مجھے

Ghalib Poetry

Ghalib Poetry


Ishrat e Qatra Hai Darya Main Fana Ho Jana

Dard Ka Had Sy Guzarna Hai Dawa Ho Jana

عشرتِ قطرہ ہے دریا میں فنا ہو جانا

درد کا حد سے گزرنا ہے دوا ہو جانا

Ghalib Poetry

Ghalib Poetry


Kehty Hain Jeety Hain Umeed Pay Log

Ham Ko Jeeny Ki Bhi Umeed Nahee

کہتے ہیں جیتے ہیں اُمید پہ لوگ

ہم کو جینے کی بھی اُمید نہیں۔۔۔۔۔

Ghalib Poetry

Ghalib Poetry


Kaaby Kis Munh Sy Jaoo Gy Ghalib

Sharam Tum Magar Nahee Ati………

کعبے کس منہ سے جاؤ گے غالبؔ

شرم تم کو مگر نہیں آتی۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

Ghalib Poetry

Ghalib Poetry


Naa Hui Gar Mery Marny Sy Tassali Na Sahee

Imtehaaa’n Or Bhi Baqi Hoon To Yeh Bhi Na Sahee

نہ ہوئی گر میرے مرنے سے تسّلی نہ سہی

امتحاں اور بھی باقی ہوں تو یہ بھی نہ سہی

Ghalib Poetry

Ghalib Poetry


Yaad Hain Ghalib! Tujhe Wo Din K Wajd e Zoq Main

Zakham Sy Girta, To Main Palkoon Sy Chunta Tha Namak

یاد ہیں غالبؔ! تجھے وہ دن کہ وجدِ ذوق میں

زخم سے گرتا، تو میں پلکوں سے چنتا تھا نمک

Ghalib Poetry

Ghalib Poetry


Ishq Ny Ghalib Nikammma Kr Diya

Warna Ham Bhi Admi Thy Kaam K

عشق نے غالب نکما کر دیا

ورنہ ہم بھی آدمی تھے کام کے

Ghalib Poetry

Ghalib Poetry


Bana Kr Faqeeroo’n Ka Ham Bhais Ghalib

Tamasha ey Ahl e Karam Daikhty Hain…….

بنا کر فقیروں کا ہم بھیس غالب

تماشائے اہلِ کرم دیکھتے ہیں۔۔

Ghalib Poetry

Ghalib Poetry


Sehra Ko Bara Alاm Hai Apni Tanhai Par Ghalib

Us Ny Daikha Nahee Aalaam Merii Tanhai Ka

صحرا کو بڑا الم ہے اپنی تنہائی پر غالب

اْس نے دیکھا ہی نہیں عالم میری تنہائی کا

Ghalib Poetry

Ghalib Poetry


Aashiq Hwey Hain Ap Bhi Aik Or Shakhs Par

Akhir Sitam Ki Kch To Mukafat Chahiyee……

عاشق ہوئے ہیں آپ بھی ایک اور شخص پر

آخر ستم کی کچھ تو مکافات چاہیے۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

Ghalib Poetry

Ghalib Poetry


Meharbaaa’n Ho K Bula Lo Mujhe Chaho Jis Waqt

Main Gaya Waqt To Nahee Hun K phr Aaa Bhi Naa Saku

مہرباں ہو کہ بلا لو مجھے چاہو جس وقت

میں گیا وقت تو نہیں ہوں کہ پھر آ بھی نہ سکوں

Ghalib Poetry

Ghalib Poetry


Itna To Mujhe Yad Hai Kch Uss Ny Kaha Tha

Kia Uss Ny Kaha Tha Yeh Mujhe Yaad Nahee Hai

اتنا تو مجھے یاد ہے کچھ اْس نے کہا تھا

کیا اْس نے کہا تھا یہ مجھے یاد نہیں ہے

Ghalib Poetry

Ghalib Poetry


Ham Ko Un Sy Hai Wafa Ki Umeed

Jo Nahee Janty Wafa Kia Hai………..

ہم کو اْن سے ہے وفا کی اْمید

جو نہیں جانتے وفا کیا ہے

Ghalib Poetry

Ghalib Poetry


Manzil Mily Ge Bhatak Kr He Shaee

Gumrah To Wo Hain Jo Ghar Sy Nikly He Nahee

منزل ملے گی بھٹک کر ہی سہی

گمراہ تو وہ ہیں جو گھر سے نکلے ہی نہیں

Ghalib Poetry

Ghalib Poetry


Aaina Q Naa Du’n K Tamasha Kahen Jisy

Aica Kahan Sy Laoon K Tujh Saa Kahen Jisy

آئینہ کیوں نہ دوں کہ تماشا کہیں جسے

ایسا کہاں سے لاؤں کہ تجھ سا کہیں جسے

Ghalib Poetry

Ghalib Poetry


Arz e Niaaz Ishq K Qabil Nahee Raha

Jis Dil Py Naaz Tha Mujhe Wo Dil Nahee Raha

عرضِ نیاز عشق کے قابل نہیں رہا

جس دل پہ ناز تھا مجھے وہ دل نہیں رہا

Ghalib Poetry

Ghalib Poetry


Kbhi Jo Yaad Ata Hun Main,  To Kehty Hain Hain

K, “Aaj Bazm Main Kch Fitna o Fasad Nahee”………..

کبھی جو یاد آتا ہوں میں، تو کہتے ہیں

“کہ، ” آج بزم میں کچھ فتنہ و فساد نہیں

Ghalib Poetry

Ghalib Poetry


Zahid Sharab Peeny Dey Masjid Main Baith Kar

Ya Wo Jagah Bta Mujhe Jahan Par Khuda Nahee

زاھد شراب پینے دے مسجد میں بیٹھ کر

یا وہ جگہ بتا مجھے جہاں پر خدا نہیں۔۔۔۔

Ghalib Poetry

Ghalib Poetry


Jaty hwey Kehty Hain “Qayamat Ko Milain Gain “

Kia Khoob! Qayamat Ka Hai Goya Koi Or Din…….

“جاتے ھوئے کہتے ہیں “قیامت کو ملیں گے

کیا خوب! قیامت کا ہے گویا کوئی اور دن۔۔۔۔۔۔

Ghalib Poetry

Ghalib Poetry


Jb Jeeny Ka Shoq Tha To Dushman Hazaar Thy

Ab Marna Chahta Hun to Qatil Nahee Milta…….

جب جینے کا شوق تھا تو دشمن ہزار تھے

اب مرنا چاہتا ہوں تو قاتل نہیں ملتا۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

Ghalib Poetry

Ghalib Poetry


Leave a Comment