Urdu Ghazal

Urdu Ghazal

Ghazal in Urdu does not need any introduction. It is the pure expression of a loving and lovely heart. Urdu Ghazal is the top most shining sun of love which emits the rays of love from a precious heart. If it’s said that Urdu Ghazal captures the Heart, it is not wrong. The man forgets himself in the valley of LOVE.

غزل

عجب قصہ ہے یارانِ جہاں کا

محبت بھی کرتے ہیں،درد بھی دیتے ہیں

نصیب والوں کو ملتے ہیں مخلص رشتے

ورنہ بھائی ہی یوسفؑ کو کنویں میں پھینکتے ہیں

ہے ان کی محبت کا بھی عجب عالم

کلیوں میں بھی وہاں کانٹے ملتے ہیں

یہ سوچ تھی ہماری کہ خاص ہیں ہم ورنہ

اِک ہم ہی تو نہیں ان کی نظر میں ملتے ہیں

حوصلہ نہیں اب زندگی کو سہنے کا ورنہ

پہاڑوں کو بھی دیا ہم رستہ کرتے ہیں

ہے یہی ریت اس عالمِ رفقاء کی افق ؔ

کرکے وعدے،وفا بھول جاتے ہیں

 

Ajab Qissa Hai Yaraan E Jahaan Ka

Muhabbat Bhi Karty Hain, Dard Bhi Dety Hain

Naseeb Walon Ko Milty Hain Mukhlis Rishty

Warna Bhai Hi Yusuf(A.S) Ko Kuwen Mein Phenkty Hain

Hai Unki Muhabbat Ka Bhi Ajab Aalam

Kalion Mein Bhi Wahan Kanty Milty Hain

Ye Soch Thi K Khaas Hain Hum Warna

Ik Hum Hi To Nahi Unki Nazar Mein Milty Hain

Hosla Nahi Abb Zindagi Ko Sehny Ka Warna

Pahaaron Ko Bhi Diya Hum Rasta Krty Hain

Hai Yahi Reet Is Aalam E Rufaqaa Ki Ufaq

Kar Kay Waady, Wafa Bhool Jaty Hain

*****

A broken heart is the depictive of thousands of broken hearts. When it sings a rending melody, it sounds the all such hearts. It’s the voice of thousands of hearts which seek refuge in its melody and take it as their own sound.Urdu Ghazal

READ  Romantic Poetry | 50+ Love Poetry | Urdu Romantic Poetry

غزل

میری اداس داستاں کوئی پڑھ سکے

یہ آنکھیں ویراں کوئی پڑھ سکے

کہ نہ ہو ضرورت کچھ کہنے کی

میری عرضِ خامشاں کوئی پڑھ سکے

بھلا ہے کون ایسا ہمدم

چلے جو ساتھ میرے ہرقدم

کہ نہ گُل و ضوفشاں ہوں میں

حرف ہوکربھی بے زباں ہوں میں

مٹ گئے ہیں محبتوں کے نشاں اپنے

پھر کیوں دیکھیں اب ہم کوئی سپنے

جسے دعوٰیء عشق ہوکسی سے

کرے وفا پہلے وہ اس سے

جوہیں خامیاں میری، ہے وہی میری ثروت

کہ نہ نیک ہوں،نہ ہے کوئی میری دولت

جونہ ہوسکا،نہ کرسکے ہم

نہ تھا مقدر،نہ ہی تھا ہم میں دم

اب آرزو یہی ہے ملے بس اتنی سی مہلت

چکائیں سبھی قرض و فرض،ملے تیری قربت

Meri Udaas Daastaan Koi parh Saky

Yeh Aankhen Weeraan Koi Parh Saky

Keh Naa Ho Zaroorat Kuch Kehny Ki

Meri Arz E Khaamshaan Koi Parh Saky

Bhala Kon Aesa Hamdam

Chaly Jo Sath Mery Har Qadam

Keh Naa Gull O Zoofeshaan Hon Main

Harf Ho Kar Bhi BeZubaan Hon Main

Mitt Gaey Hain Muhabbaton Kay Nishaan Apny

Phir Kiyon Dekhen Abb Hum Koi Sapny

Jisy Daawa E Ishq Ho Kisi Say

Kary Wafa Pehly Wo Uss Say

Jo Hain Khamiyan Hai Wahi Meri Sarwat

Keh Naa Naik Hon, Naa Hai Koi Meri Dolat

Jo Naa Ho Ska, Naa Kar Saky Hum

Naa Tha Muqaddar, Naa Hi Tha Hum Mein Dam

Ab Aarzoo Yahi Hai, Mily Bas Itni Si Muhlat

Chukain Sabhi Qarz O Farz, Mily Teri Qurbat

*****

Munir Niyazi is one of the best poets of Urdu. His Poetry attracts the lovely hearts as the melody which his ghazals sings is not only sweet but also profound of a beautiful pain with the beauty of LOVE. As the LOVE conquers the hearts, Munir’s ghazals captures the lovely ones.

READ  December Poetry- Urdu Poetry

کج شوق سی یار فقیری دا

کج عشق نے در در رول دتا
کج ساجن کسر نہ چھرڑی سی
کج زہر رقیباں گھول دتا
کج ہجر فراق دا رنگ چڑھیا
کج درد ماہی انمول دتا
کج سڑ گٸی قسمت بدقسمت دی
کج پیار وچ جداٸی رول دتا
کج اونج وہ راہواں اوکھیاں سن
کج گل وچ غماں دا طوق وی سی
کج شہر دے لوگ وہ ظالم سن
کج سانوں مرن دا شوق وہ سی
Kuj Shoq si Yaar Faqiri Da
Kuj Ishq Ny Dar Dar Rol Dita
Kuj Sajan Kasar Na Chori Si
Kuj Zehr Raqeebaan Ghol Dita
Kuj Hijr Firaq Da Rang Charhiya
Kuj Dard Maahi Anmol Dita
Kuj Sarr Gai Qismt, BadQismt Di
Kuj Piyar Vich Judai Rol Dita
Kuj Onj Vi Rahwaan Aukhiaan San
Kuj Gal Vich Ghamaan Da Toq Vi Si
Kuj Shehr Dy Log Vi Zalim San
Kuj Saanon Maran Da Shoq Vi Si
*****
Urdu Ghazal is full of pure LOVE especially for the loving ones. This Ghazal shows the love for loving ones by lovely hearts.

کیوں تم اچھے لگتے ہو

وقت ملا تو سوچیں گے
تجھ میں کیا کیا دیکھا ہے
وقت ملا تو سوچیں گے
ساراشہر شناساٸی کا دعویدار تو ہے لیکن
کون ہمارا اپنا ہے
وقت ملا تو سوچیں گے
موسم
خوشبو
بادِصبا ٕ
چاند
شفق اور تاروں میں
کون تمھارے جیسا ہے
وقت ملا تو سوچیں گے
میں نے تم کو لکھا تھا
کچھ ملنے کی تدبیر کرو
تم نے لکھ کر بھیجا ہے
وقت ملا تو سوچیں گے
Kion Tum Achy Lagty Ho
Waqt Mila To Sochen Gy
Tujh Mein Kiya Kiya Dekha Hai
Waqt Mila To Sochen Gy
Sara Shehr Shanasaai Ka Daawedaar To Hai Lekin
Kon Hamara Apna Hai
Waqt Mila To Sochen Gy
Mosam
Khushboo
Baad E Sabaa
Chaand
Shafaq Aur Taaron Mein
Kon Tumhary Jesa Hai
Waqt Mila To Sochen Gy
Main Ny Tum Ko Likha Tha
Kuch Milny Ki Tadbeer Kro
Tum Ny Likh Kr Bheja Hai
Waqt Mila To Sochen Gy
*****

Urdu Ghazal shows the pain of the beautiful hearts. It spreads LOVE all around.

READ  Iqbal Poetry-Beautiful Poetry

کوٸی چھاٶں ہو

جسے چھاٶں کہنے میں
دوپہر کا گماں نہ ہو
کوٸی شام ہو
جسے شام کہنے میں شب کا نشاں نہ ہو
کوٸی وصل ہو
جسے وصل کہنے میں ہجررت کا دھواں نہ ہو
کوٸی لفظ ہو
جسے پڑھنے کی چاہ میں
کبھی اک لمحہ گراں نہ ہو
یہ کہاں ہوا ہے کہ ہم تمھیں
کبھی اپنے دل سے پکارنے کی سعی کریں
وہیں آرزو بےاماں نہ ہو
وہیں موسمِ غمِ جاں نہ ہو
Koi Chhaaon Ho
Jisy Chhaaon Kehny Mein
Dupehr Ka Gumaan Naa Ho
Koi Shaam Ho
Jisy Shaam Kehny Mein Shab Ka Nishaan Naa Ho
Koi Wasl Ho
Jisy Wasl Kehny Mein Hijr-Rut Ka Dhuwaan Naa Ho
Koi Lafz Ho
Jisy Parhny Ki Chaah Mein
kabhi Ik Lamha Giraan Naa Ho
Yeh Kahaan Hua Hai Keh Hum Tumhen
kabhi Apny Dil Sy Pukarny Ki Sa’ee Kren
Wahin Aarzoo BeAmaan Naa Ho
wahin Mosam E Gham E Jaan Naa Ho
*****

 

 

 

Leave a Comment